خرم دستگیر خان

image description

تعارف

خرم دستگیر خان

خرم دستگیر خان 3 اگست 1970 کو پیدا ہوئے، آپ نے گوجرنوالہ اسکول سے ابتدائی تعلیم حاصل کی جس کے بعد حسن ابدال کے کیڈیٹ کالج میں بقیہ تعلیم حاصل کی۔

تعلیمی قابلیت

آپ نے امریکا کی کیلی فورنیا یونیورسٹی سے الیکٹریکل انجیئر کی ڈگری حاصل کی بعد ازاں شعبہ معاشیات و اقتصادیات میں اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے لیے بوڈوائن کالج میں داخلہ لیا۔

سیاسی کیرئیر

مسلم لیگ ن کی 1999 میں بننے والی حکومت کے دوران آپ نے وزیر اعظم نوازشریف کے معاونِ خصوصی کے طور پر امور سرنجام دیے بعد ازاں جنرل (ر) پرویز مشرف نے حکومت کا خاتمہ کیا۔

آپ نے 2002 کے انتخابات میں قومی اسمبلی کے حلقے این اے 96 سے مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر انتخابات میں حصہ لیا مگر اُس میں کامیابی نہ مل سکی، بعد ازاں آپ پر پیپلزپارٹی کے دو کارکنان پر تشدد کرنے کا مقدمہ درج کیا گیا۔

سن 2006 سے 2009 تک آپ نے مسلم لیگ ن کے انفارمیشن سیکریٹری کے طور پر امور سرانجام دیے بعد ازاں 2008 کے انتخابات میں پارٹی نے آپ کو قومی اسمبلی کا ٹکٹ دیا جس کے بعد آپ کامیاب ہوکر پہلی بار ایوان پہنچے۔

گزشتہ یعنی سن 2013 کے عام انتخابات میں آپ ایک بار پھر منتخب ہوکر قومی اسمبلی پہنچے اور پھر وزیر اعظم نے آپ کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کی وزات کا قلم دان سونپا پھر حکومت نے آپ کو نجکاری کمیشن کا چیئرمین بھی تعینات کیا۔

دسمبر 2013 میں حکومت نے خرم دستگیر کو وفاقی وزیر برائے صنعت و تجارت کا قلمدان سونپا، پانام پیپرز کا فیصلہ آنے کےبعد  شاہد خاقان عباسی نے آپ کو اپنی کابینہ میں شامل کیا اور پہلی بار وزارتِ دفاع کا قلمدان سونپا بعد ازاں مئی میں خواجہ آصف کی نااہلی کے بعد آپ کو وفاقی وزیر خارجہ کا اضافی عہدہ بھی دیا گیا۔