رضا حیات ہیراج

image description

تعارف

رضا حیات ہیراج


رضا حیات ہیراج  21 جولائی 1969 میں پیدا ہوئے ، ابتدائی تعلیم ملتان میں لاء سال ہائی سکول میں حاصل کی بعد ازاں لاہور اور پھر لندن میں اعلی تعلیم حاصل کی  اور وہاں سے بار ایٹ لاکی ڈگری حاصل کی وطن واپس آکر لاہور ہائی کورٹ میں پریکٹس کرتے رہے۔

انھوں نے آبائی علاقہ کبیروالا میں  ہراج گروپ کے سربراہ اور  سابق ایم این اے مہر محمد اقبال ہراج مرحوم کے ساتھ سیاسی زندگی کا آغاز کیا اور کچھ عرصے میں ہی   سابق ایم این اے مہر محمد اقبال ہراج مرحوم نے رضا حیات کو اپنا سیاسی جانشین مقرر کردیا۔

عام نتخابات ۔1997 میں  بیرسٹر رضا حیات ہراج نے قومی اسمبلی کی نشست پر سید گروپ کے امیدوار، سابق اسپیکر قومی اسمبلی سید فخر امام  کے مد مقابل الیکشن لڑا ، جس میں انہیں  شکست کا سامنا کرنا پڑا  تاہم وہ سیاسی میدان میں سرگرم عمل رہے۔

سال 2002 میں مشرف کے دور اقتدار میں ہونے والے انتخابات میں پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر الیکشن میں حصہ لیا ،  کامیابی حاصل کی اور قانون و انصاف،پارلیمانی امور اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے وزیر مملکت کے طور پر وفاقی کابینہ کا حصہ بنے

بیرسٹر رضا حیات ہراج اسی دور میں پٹریاٹ کے مسلم لیگ (ق) میں ضم ہوجانے کے باعث مسلم لیگ (ق) کا حصہ بن گئے تھے

الیکشن 2008 میں رضا حیات نے مسلم لیگ (ق) کے ٹکٹ پر انتخاب میں حصہ لیا  اور اس حلقے سے مسلسل دوسری بار کامیابی حاصل کی اور ۔اس بار بھی ان کے مد مقابل سابق سپیکر قومی اسمبلی سید فخر امام تھے ۔

بیرسٹر رضا حیات ہراج  کو اس دور اقتدار میں  وزارت ہاؤسنگ  و تعمیرات کا وزیر مملکت بنایا گیا مگر انہوں نے چند ماہ بعد اس منصب سے استعفی دے دیا تھا۔

 2013 میں رضا حیات ہراج نے اپنے آبائی علاقے کبیر والا سے آزاد امیدوار کے طور پر حصہ لیا اور کامیاب قرار پائے بعد ازاں مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کرلی،

مسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی رضا حیات ہراج نے مارچ 2018 میں باقاعدہ طور پر تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی۔

الیکشن 2018 میں رضا حیات ہراج این اے 150 سے تحریک انصاف کے امیدوار ہے ، ان کا مقابلہ پاکستان مسلم لیگ ن کے نامزد ایڈمرل سعید سرگانہ اور آزاد امیدوار سید فخر امام سے ہیں۔